اذان اور اقامت کی سنتیں اور آداب – ۱۷

مغرب کی اذان کے وقت کی دعا:

مغرب کی اذان کے درمیان یا مغرب کی اذان کے بعد مندرجہ ذیل دعا پڑھیں [۱]:

اللّٰهُمَّ إِنَّ هٰذَا إِقْبَالُ لَيْلِكَ وَإِدْبَارُ نَهَارِكَ وَأَصْوَاتُ دُعَاتِكَ فَاغْفِرْ لِيْ

اے اللہ ! بے شک یہ رات کے آنے کا اور دن کے جانے کا وقت ہے اور یہ آپ کے پکارنے والے بندوں (مؤذنین) کی آوازیں ہیں جو آپ کی طرف بلا رہے ہیں۔ آپ میرے گناہوں کی مغفرت فرمائییے۔

عن أم سلمة رضي الله عنها قالت: علمني رسول الله صلى الله عليه وسلم أن أقول عند أذان المغرب: اللهم إن هذا إقبال ليلك وإدبار نهارك وأصوات دعاتك فاغفر لي (سنن أبي داود رقم ٥٣٠)[۲]

حضرت ام سلمہ رضی اللہ عنہا نے فرمایا ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے مجھے تعلیم فرمائی کہ میں مغرب کی اذان کے وقت مندرجہ ذیل دعا پڑھوں:

اللّٰهُمَّ إِنَّ هٰذَا إِقْبَالُ لَيْلِكَ وَإِدْبَارُ نَهَارِكَ وَأَصْوَاتُ دُعَاتِكَ فَاغْفِرْ لِيْ

Source: http://ihyaauddeen.co.za/?cat=7597


[۱]الظاهر أن يقال هذا بعد جواب الأذان أو في أثنائه (مرقاة ۲/۳٦۵)

[۲] قال الحاكم: هذا حديث صحيح ولم يخرجاه والقاسم بن معن بن عبد الرحمن بن عبد الله بن مسعود رضي الله عنه من أشراف الكوفيين وثقاتهم ممن يجمع حديثه ولم أكتبه إلا عن شيخنا أبي عبد الله رحمه الله. وأقره الذهبي وقال صحيح (المستدرك للحاكم رقم ۷۱٤)

Check Also

مسجد کی سنتیں اور آداب – ۱

حضرت انس بن مالک رضی اللہ عنہ فرمایا کرتے تھے کہ مسجد میں داخل ہونے کے وقت دایاں پیر پہلے داخل کرنا اور نکلتے وقت بایاں پیر پہلے نکالنا سنت میں سے ہے...