مجالس کی زینت

عن ابن عمر رضي الله عنهما قال قال رسول الله صلى الله عليه وسلم زينوا مجالسكم بالصلاة علىّ فان صلاتكم علي نور لكم يوم القيامة.رواه الديلمي (القول البديع،صـ ٢٧٨)

حضرت عبد اللہ بن عمر رضی اللہ عنہما سے روایت ہے کہ رسو ل اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا : “مجھ پر دورد بھیج کر اپنی مجلسوں کو زینت بخشو(خوب صورت بناؤ)۔بے شک تمہارا درود قیامت کے دن تمہارے لیے باعثِ نور ہوگا”۔

کثرت سے درود شریف پڑھنے کی برکت

حضرت سعد زنجانی رحمہ اللہ نے ایک مرتبہ یہ  واقعہ بیان کیا  کہ مصر میں  ابو سعید خیاط نامی ایک زاہد آدمی تھے ۔ وہ لوگوں سے میل جول نہیں رکھتے تھے۔ اور نہ ہی لوگوں کی مجلسوں میں شرکت کرتے تھے (خلوت پسند آدمی تھے)۔کچھ دنوں  کے بعد لوگوں نے دیکھا کہ وہ پابندی سے ابن رشیق رحمہ اللہ کی مجلس میں شرکت کر رہے ہیں، تو انہوں نے ان سے تعجب سے دریافت کیا کہ کیا ماجر ا ہے ؟  انہوں نے جواب دیا کہ میں نے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی خواب میں زیارت کی تو آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے مجھ سے فرمایا: ابن رشیق کی مجلس میں شرکت کرو؛ کیوں کہ وہ مجھ پر کثرت سے درود بھیجتے ہیں۔(القول البدیع ، ص ۱۳۱)

يَا رَبِّ صَلِّ وَ سَلِّم  دَائِمًا أَبَدًا عَلَى حَبِيبِكَ خَيرِ الْخَلْقِ كُلِّهِمِ

 Source: http://ihyaauddeen.co.za/?p=5967 & http://whatisislam.co.za/index.php/durood/item/379