ملفوظات

دین کے لیے جدو جہد کرنا

ہمارے بزرگوں کا مقولہ ہے "جو ہماری انتہا کو دیکھے وہ ناکام اور جو ابتداء کو دیکھے وہ کامیاب"، اس لیے کہ ابتدائی زندگی مجاہدوں میں گزرتی ہے اور اخیر میں فتوحات کے دروازے کھلتے ہیں...

Read More »

حقیقی ایمان کی علامت

"ایمان یہ ہے کہ اللہ و رسول صلی اللہ علیہ وسلم کو جس چیز سے خوشی اور راحت ہو بندہ کو بھی اس سے خوشی اور راحت ہو۔ اور جس چیز سے اللہ و رسول صلی اللہ علیہ وسلم کو ناگواری اور تکلیف ہو بندہ کو بھی اس سے ناگواری اور تکلیف ہو۔ اور تکلیف جس طرح تلوار سے ہوتی ہے اسی طرح سوئی سے بھی ہوتی ہے...

Read More »

تحفّظ دین بزرگانِ دین کی صحبت پر موقوف ہے

حضرت مولانا اشرف علی تھانوی رحمہ اللہ نے ایک مرتبہ فرمایا:

"یہ زمانہ نہایت نہایت ہی پُر فتن ہے۔ اس میں تو ایمان ہی کے لالے پڑے ہیں۔ اسی وجہ سے میں نے بزرگانِ دین کی صحبت کو فرضِ عین قرار دیا ہے۔ میں تو فتوٰی دیتا ہوں کہ...

Read More »

تلکیف کا باعث نہ بننا

اس زمانہ میں درود شریف اور استغفار کی کثرت رکھی جاوے اور اس کی کوشش کی جاوے کہ کسی رفیق کو میری طرف سے تکلیف نہ پہنچے اور اگر کسی کی طرف سے حق تلفی اور تعدّی ہو تو اس پر التفات نہ کیاجاوے...

Read More »

ڈاڑھی منڈوانے کا نقصان

حضرت شیخ مولانا محمد زکریّا رحمہ اللہ نے ایک مرتبہ فرمایا:

آج لوگ داڑھی منڈھوانے کو گناہ نہیں سمجھتے، ایک دفعہ حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کے پاس دو کافر قاصد آئے وہ داڑھی مونڈھے تھے، حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے منھ پھیر لیا، میرے پیارو...

Read More »